حکومت نے گیس، نیپرا نے بجلی تو مقامی مارکیٹنگ کمپنیوں نے ایل پی جی کی قیمتوں میں اضافہ کر دیا فی کلو گرام ایل پی جی کی قیمت میں تقریباً 5.50 روپے بڑھنے کے بعد گھریلو سلنڈرکی قیمت میں 65.58 روپے اور کمرشل سلنڈرکی قیمت 252.35 روپے کا اضافہ ہوگیا ہے۔

گیس کی قیمت حکومت نے بڑھائی تو بجلی کی قیمتوں میں نیپرا نے اضافہ کر دیا جبکہ حکومت نئے اضافے کیلئے پر تول رہی ہے جن کی دیکھا دیکھی مقامی مارکیٹنگ کمپنیوں نے ایل پی جی کی قیمت میں بھی تقریباً 5.50 روپے فی کلو کا اضافہ کردیا ہے۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق مائع پیٹرولیم گیس کی اکتوبرکے لیے فی ٹن سعودی آرامکو کنٹریکٹ پرائس میں 38 ڈالر 70 سینٹ کے اضافے کو جواز بناکرمقامی ایل پی جی مارکیٹنگ کمپنیوں نے اوگرہ نوٹیفکیشن کے بغیر ہی یہ اقدام کیا ہے۔
فی کلو گرام ایل پی جی کی قیمت میں تقریباً 5.50 روپے بڑھنے کے بعد گھریلو سلنڈرکی قیمت میں 65.58 روپے اور کمرشل سلنڈرکی قیمت 252.35 روپے کا اضافہ ہوگیا ہے۔
یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کنٹریکٹ پرائس میں اضافے کے سبب صرف درآمدہ ایل پی جی کی فی ٹن قیمت 5557.74 روپے سے بڑھ کر 1لاکھ 36 ہزار732 روپے ہوگئی ہے۔
دوسری جانب ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن کے چئیرمین عرفان کھوکھر کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ عالمی قیمت کا اطلاق ملک میں صرف درآمدہ ایل پی جی پر ہوناچاہیے لیکن مقامی مارکیٹنگ کمپنیوں نے قیمتوں میں بلا جواز اضافہ کرکے حکومتی رٹ کو ایک بار پھر چیلنج کردیا ہے۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.